Mukammal Kuch Ni Hota 0 Reviews

By: Saira Iqbal

No Ratings Yet

عورت کوئی بھی ہو اسکی ساری زندگی خود کو منوانے میں گزر جاتی ہے۔ کہیں وہ خود پہ لگےتہمتوں کےان داغوں کو دھو رہی ہوتی ہے جو کہ اس کا گناہ ہی نہیں۔ کہیں نام نہاد معاشرے کے نام نہاد رسموں کی بھینٹ چڑھتی ہے۔ ”مکمل کچھ نہیں ہوتا“ بیشمار تلخ حقیقتوں کا ایسا مجموعہ ہے جو حادثاتی طور پر وقوعہ پزیر ہوا۔اس میں شامل ہونے والے افسانے ایک خاص خیال و عنوان کے تحت لکھے گئے ۔

کچھ معاشرے کی کڑوی سچائیاں ہیں تو کچھ انسانوں کے تلخ و بےدرد رویے جنہوں نے اس سوچ کو جنم دیا۔ کہانی کسی کی بھی ہو چنی، منتظر، شہ پارہ، آپ یا میں عورت اسی رنگ ڈھنگ میں جیتی ہے ۔سکرین پر سے چہرے بدلتے ہیں مگر کردار وہی رہتا ہے۔ عزتیں سرِ بازار بھی پامال ہوتی ہیں اور داغ سات پردوں میں بھی لگ جاتا ہے۔

”تخیل“، ”مرادکی بیوی“، ” کالی اینٹیں“ یا ”بابا زلیخہ“ کی کہانی ہو معاشرتی قدریں بھی تباہ ہوتی ہیں اور رشتے بھی چاہے وہ خون کے ہوں یا دل کے۔ حقیقت کوئی بھی، لکھنے والے لکھ لیتے ہیں اور پڑھنے والے بھی نظر ڈال لیتے ہیں، مشکل ہے تو حقیقت کو تسلیم کرنا۔۔

ISBN (Digital) 000
ISBN (Hard copy) 978-969-662-091-4
Total Pages 160
Language Urdu
Estimated Reading Time 3 hrs
Genre Popular Fiction
Published By Gagan Shahid & Ammar Shahid
Published On 04 Sep 2018
Saira Iqbal

Saira Iqbal

Saira is a contemporary Urdu fiction and current affair's writer who habitually picks up stories from her surroundings and weaves them into literary masterpieces. She has three (03) novels to her name. Currently, she is pursuing a doctorate degree from Quaid-e-Azam University, Islamabad where she is combining her love of literature with her expertise in architecture design. This project's innovation has opened new avenues of research which was highly applauded by the literati. Saira believes that literature is like fragrance and it is bound to diffuse into other cultures. Arabic translation of her upcoming novel titled "Sehra main Muhabbat" next year from Egypt, is a testimony to this fact. She used to write columns for Insaf newspaper but nowadays, she is working with a Greek writer Yanis Fatimi.

Reviews


Be the first to review it. Start now.

Books by Same Author


Books in Same Genre