اردو معاشرے میں غزل کی مقبولیت کے کم دیدہ اور نادیدہ جواہر اور صفات - Urdu Maushray Mai Ghazal Ki Maqbooliyat Key Kam-Deeda Aur Na-Deeda Jawahir Aur Safaat 1 Reviews

By: Prof. Muhammad Rais Alvi

Hardcopy Price

PK Flag
PKR 450
INR Flag
INR 300
USD Flag
USD 20

ISBN (Digital) 978-969-696-687-6
ISBN (Hard copy) 978-969-696-688-3
Total Pages 197
Language Urdu
Estimated Reading Time 3.5 hours
Genre Research Work
Published By Daastan
Published On 27 Jun 2022
No videos available
Prof. Muhammad Rais Alvi

Prof. Muhammad Rais Alvi

پروفیسر محمد رئیس علوی کی شخصیت ، ایک فرحت بخش احساس۔۔۔!

پروفیسر محمد رئیس علوی ایک دنیا، علم کا خزانہ، اعلی اخلاق کی انتہا، جستجو کا پیکر، ایمانِ مفصل ،اعلی کردار کا کو ہ ِپیما، نہایت مخلص اور محنتی انسان تھے۔ آپ کا اخلاق آپ کی شناخت بن گیا آپ کا لامحدود علم، عجز و انکساری، آپ کا استاد ہونا آپ کا طرزِ زندگی تھا۔

پروفیسر صاحب کے بیشتر عمل سنتِ رسولﷺ پر پیروی کرنے کی کوشش میں اور اللہ کے قریب تر ہونے کی جستجو میں ہوتے تھے۔جو لوگ پروفیسر صاحب کو جانتے تھے اور ان کے ساتھ کچھ وقت گزار چکے ہیں وہ اپنی زندگی کو بھی اللہ اور رسولؐ کے احکامات کی پیروی کرنے میں گزار سکتے ہیں۔.ان کے لیے کہا گیا ہے کہ وہ ایک ماڈرن درویش تھے اور بہت پہنچے ہوئے صوفی تھے۔

ان کی قابلیت، عملی معیار، انتظامی کمال ،قانونی تفہیم ،قانون کی پیروی اور سختی کے ساتھ اس پر عمل درآمد اور کمال پرستی کی تمام خصوصیات کے ساتھ ساتھ ان کی خوبصورت، دلفریب، دل لبھانے والی پرخلوص مسکراہٹ اور اخلاق کی بلندیوں کو چھونے والی شخصیت  بےحد پرکشش تھی۔

پروفیسر محمد رئیس علوی نے کراچی میں خصوصاً ہائر ایجوکیشن کے لیے بہت کام کیا اور پرائیویٹ یونیورسٹیوں کے فروغ کا سہرا  بھی آپ کے سر بندھتا ہے ۔آپ نے اسکول و کالج کی تعلیم اور نظامِ تعلیم کے فروغ اور درستی کے لیے بیش بہا خدمات انجام دیں۔ آپ اردو زبان کے پروفیسر کے فرائض پاکستان میں اور جاپان میں بھی ٹوکیو یونیورسٹی آف فارن سٹڈیز کے شعبۂ اردو میں بحیثیت مہمان پروفیسر کے انجام دیتے رہے۔ پھر ایڈیشنل سیکرٹری سندھ ایجوکیشن رہے، اس کے بعد ای ڈی او کراچی،پھر کراچی یونیورسٹی کے رجسٹرار رہے اور پھر قلندر شہباز یونیورسٹی ،نیوپورٹ یونیورسٹی اور آخر میں خادم علی شاہ یونیورسٹی کے وائس چانسلر رہے۔ اس کے ساتھ ساتھ آپ برسوں تک کمشنز اسکاٹس کے فرائض بھی انجام دیتے رہے۔یہ کتاب پروفیسر صاحب کی استادی کا اعلان کرتی ہوئی نظر آتی ہے۔ پروفیسر رئیس علوی نے کہا تھا کہ ان کی یہ کتاب بی اے اور ایم اے کے طالب علموں کے لیے ریفرینس کتاب کے طور پہ کام آئےگی ۔ ہمیں امید ہے کہ طلباء اس کتاب سے بہت استفادہ حاصل کریں گے ۔

اللہ پروفیسر محمد رئیس علوی کے درجات بلند فرمائے اور ہمیں ان کے نقش ِقدم پر چلنے کی توفیق عطافرمائے۔ آمین!

فرح رئیس علوی

١١ مئی ٢٠٢٢ء

https://mraisalvi.com/

Reviews


Fiza Masood

Rating:

Oct 29, 2022

اسلامُ علیکم۔ امید ہے آپ سب خیریت سے ہونگے۔
پھر سے حاضر ہوں ایک بہت ہی عمدہ کتاب کے تبصرے کے ساتھ۔.

کتاب: اردو معاشرے میں غزل کی مقبولیت کے کمدیدہ اور نادیده جواہر اور صفات
مصنف: پروفیسر محمد رئیس علوی
ذریعہء کتاب: @mydaastan

ratings: ⭐⭐⭐⭐⭐

????اس کتاب کے لکھنے کا اصل مقصد شعبہء اردو سے منسلک لوگوں کو اردو غزل کی قدیم تاریخ سے آگاہی دینا ہے۔

????اس کتاب کی سب سے اچھی چیز اس میں استعمال کردہ سادہ الفاظ ہیں جسکی وجہ سےکتاب میں دلچسپی برقرار رہی۔

????اس کتاب میں 10 شاعروں کی زندگی کا نقشہ بے حد خوبصورتی سے کھینچا گیا ہے۔ کس طریقے سے ان لوگوں نے غزل کی مقبولیت کے لیے اپنی زندگی صرف کردی۔

@mydaastan اور@daastanbookstore کا بہت شکریہ مجھے اس کتاب کو پڑھنے کا موقع ملا۔

#daastanPR #pr #bookblogger #bookstagrampk #pakistanibookstagrammers #review #urduliteratue #urdunovel #bookstagrammar #bookislife #booksarelove #readingiseverything #urduhistory #urduhistorypedia #urdupoetry #urdughazal #urdughazalhistory

Books in Same Genre